اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )سینئر تجزیہ کار ہارون الرشید نے کہا ہےپاکستان اور ترکی کا بڑا فوجی معاہد ہو گیا ہے ، پاکستان اب ان سے ٹینک خریدے گا ۔ نجی ٹی وی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوے کہا ہے کہ پاکستان ، ترکی اور آذربائیجان کے مابین دفاعی معاہد ہ طے پا گیا ہے ، آذربائیجان ہم سے اسلحہ خریدے گااور تینوں ممالک کے مابین انٹیلی جنس شیئرنگ بھی ہو گی ۔ انہوں نے کہا ہے کہ

رسول اکرمؐ کی پیش گوئی پوری ہو گئی ۔ ان کا کہنا تھا کہ آذری لوگ نسلی اعتبار سےترک ہیں انہوں ہمیشہ پاکستان کی حمایت کا اعلان کیا ہے ۔ پچھلے تین ماہ کے دوران چین اور ترکی ساتھ پاکستان کے تعلقات میں بے حد گہرائی آچکی ہے ، چین نے ہمیں بہت کچھ دیا جبکہ ترکی کیساتھ عملاً ہمارا دفاعی معاہدہ طے ہو گیا ہے انہوں نے مشتاق طیارے ہم سے خریدے ہیں اور اسلحہ بھی خریدے گا اس کے علاوہ نائیجیریا نے بھی ہم سے ایف تھنڈر 17طیارے ہم سے خریدے ہیں ۔ انہوں نے انکشاف کرتے ہوئے بتایا کہ ایک اور ملک بھی طیارے خریدنا چاہتا تھا لیکن اسے انڈیا اور امریکا نے روک دیا تھا ۔دوسری جانب سینئر تجزیہ کار ہارون الرشید نے کہا ہے نواز شریف کی پاکستان واپسی کا دور دور تک کوئی امکان نہیں ہے، بیشتر لوگ یہ کہہ رہے ہیں وہ سعودی عرب چلے جائینگے ۔انہوں نے بتایا ہے کہ سعودی عرب نے انہیں پیشکش کی ہے کہ وہ ساری عمر یہاں قیام کر سکتے ہیں۔میرا خیال ہے ان کیلئے محفوظ ترین جگہ لندن ہے جہاں ان کی سرپرستی کی جائے گا اور وہاں ان کا سرمایہ اور اولاد ہے ۔انہوں نے انویسٹمنٹ ویزااپلائی کیا ہے ، ابھی تک اس کی تردید نہیں آئی۔جلد پتہ چل جائیگا نوازشریف کیا کرینگے ۔ اپوزیشن کی سٹریٹجی یہ ہے کہ عدالتوں پر اتنا دبائو ڈالا جائے کہ وہ گھبراہٹ کا شکار ہو کر ان کے حق میں فیصلہ د یدیں۔نااہلی کی تلوار تینوں جماعتوں کے سر پر لٹک رہی ہے ۔الیکشن کمیشن یہ بھی کرسکتا ہے کہ نرم رویہ اختیار کرے اور جرمانہ کردے ۔اگر انصاف کرنا ہے تو تینوں پارٹیوں کے کیسز کو اکٹھا کرکے بیک وقت فیصلہ کیا جائے ۔فیصلہ جو بھی ہوگا معاملہ سپریم کورٹ میں ہی جائیگا۔قانون دان کہتے ہیں فیصلہ خلاف ا ٓنے سے اسمبلیاں ختم نہیں ہوں گی۔ ایک بات تو واضح ہوگئی کہ سینٹ الیکشن اب کوئی نہیں روک سکتا۔الیکشن کمیشن نے اپنا موقف سپریم کورٹ میں واضح کردیا ہے کہ اوپن بیلٹ سے ووٹنگ نہیں ہونی چاہئے ۔

یہ آئین کی روح سے درست نہیں ہے ۔ لاہور میں نوے سے 95فیصد کوڑا اٹھا لیا گیا ہے اور اس کا کریڈٹ میاں اسلم اقبال کو جاتا ہے ۔ارنب گوسوامی کے پانچ سو ٹویٹ پبلک کئے گئے ہیں۔ان سے ظاہر ہوتا ہے وہ کہہ رہاہے پلوامہ کا تو ہمیں بہت فائدہ پہنچا۔اس کی وجہ سے مودی کو بھی الیکشن میں فائدہ پہنچا اور اسے بھی فائدہ پہنچا۔اس بات سے ایک چیز واضح ہوگئی ہے کہ پاکستان کا موقف بالکل درست ہے ۔


Notice: Undefined variable: aria_req in /home/mymetrom/public_html/wp-content/themes/pinblog-urdu/comments.php on line 83

Notice: Undefined variable: aria_req in /home/mymetrom/public_html/wp-content/themes/pinblog-urdu/comments.php on line 89

اپنا تبصرہ بھیجیں